سوسالہ بزرگ

100سالہ ناگااوکا بی بی پہلی جنگ عطیم کے شروع ہونے کے سال 1914 میں پیدا ہوئیں۔
شادی کے بعد دوبچوں کی ماں بنیں اور 53 سال کی عمر میں شوہر کے انتقال کے بعد اکیلے بچوں کی پرورش کی۔
80 سال کی عمر میں گھٹنے کی تکلیف کی وجہ سے تیراکی شروع کی 80 سال کی عمر تک تیراکی کرنا انہیں نہیں آتا تھا۔
ماسٹرز کے مقابلوں میں 84 سال کی عمر میں بین الاقوامی مقابلے میں تیسری پوزیشن حاصل کی۔
لیکن اس کے بعد کوئی خاص کامیابی حاصل نہ ہو سکنے کی وجہ سے 91 سال کی عمر میں کوچ کی خدمات حاصل کیں۔ دلچسپ بات یہ ہے کہ کوئی خاص کامیابی ان کیلئے اس لئے نہیں تھی کہ 90 سال کی عمر میں ان سے پندرہ بیس سال کم عمر تیراک پہلی پوزیشن لے جاتے تھے اور ان کی پوزیشن ہمیشہ دوسری یا تیسری ہوتی تھی۔ جو کہ ان کیلئے قابلِ قبول نہیں تھی۔ان کے بقول یہ ہمیشہ دانت کچکچا کر رہ جاتی تھیں۔ اس لئے کوچ کی خدمات حاصل کرکے اپنی پیراکی کی صلاحیتوں کو چمکانا شروع کیا۔
اس کے بعد دن بدن ناگا اوکا بی بی صاحبہ نے تیراکی میں عمر رسیدہ افراد کے مقابلوں میں نئے ریکارڈ قائم کئے اور سو سال کی عمر میں اب بھی روزانہ تین گھنٹے پیراکی کی مشق کرتی ہیں۔
7 اپریل کو آل جاپان ماسٹرز کے پیراکی کے ٹورنامنٹ میں 1 گھنٹہ 15منٹ 54 سکینڈ میں 1500 میٹر کی تیراکی کرکے 100 سال کی عمر میں دنیا کا ریکارڈ قائم کر دیا۔۔
آخر میں ہنستے ہوئے کہا کہ عمر اور صحت نے ساتھ دیا تو کم ازکم 105 پانچ سال تک تیراکی جاری رکھنا چاھتی ہوں ۔
ایک انٹرویو میں انہوں نے جاپانی میں ایسے الفاظ میں زندگی کو "جینے" کے متعلق بتایا کہ شاید اردو میں ترجمہ کرکے میں آپ تک ان الفاظ کا حسن نا پہونچا سکوں۔
「目標がある事が大事」
「苦は楽のため。つらいのは良い薬。
楽ばかりしていると、ろくなことはない」
「幸福感があるから長生きできる。達成する場面を持つといい」
مقصد کا ہونا نہایت اہم ہے۔
مشکل اس لئے وجود رکھتی ہے کہ آسانی وجود رکھتی ہے(انا مع العسر الیسرا)
مشقت ایک اچھی دوائی ہے(لقد خلقناالانسان فی کبد)
خوشحالی(آسانی )ہی ہو تو کوئی بہتری وقوع پذیر نہیں ہو گی۔
خوشی کے احساس کی وجہ سے لمبی عمر حاصل ہوتی ہے۔
کامیابی کا تصور رکھو تو اچھا ہے۔
cached1cached2cached3
سوسالہ بزرگ سوسالہ بزرگ Reviewed by یاسر خوامخواہ جاپانی on 9:06 PM Rating: 5

3 تبصرے:

عادل کہا...

یاسر بھائی آپ کی گزشتہ دو تحاریر کو پڑھ کر پتہ نہیں کیوں بہت سکون ملا۔ خوش رہیں۔

عمیر کہا...

کافی عرصے بعد آپ کی اوپر تلے اور بلا ناغہ دو تحاریر پڑھ کر خوشی ہوئی۔
ویسے جاپانی لوگوں کی آخری عمر تک اس قدر متحرک رہنے کی کیا وجہ ہے؟ میں بھی ایک 70 سالہ جاپانی بابے کو Scaffolding پر چڑھ کر کنکریٹ میں ڈرل مشین چلاتے ہوئے دیکھ چکا ہوں اور صرف حیران ہونے کے سوا کچھ نہ کر سکا۔

یاسر خوامخواہ جاپانی کہا...

جینے کا حق ادا کرنے کا احساس

تقویت یافتہ بذریعہ Blogger.