فحاشی پھیلانے والا درویش۔ میلہ درویش 4

اپنی مسلمانی اور نیک نامی کے بڑے بڑے دعوے کرنے والے فاروق درویش کی اصل انتہائی شرمناک ہے۔
اپنے بلاگ اور فیس بک پیج پر فحش اور ننگی تصویریں لگا کر لوگوں کو متوجہ کرتا ہے۔
کہیں بدنام زمانہ وینا ملک کی فحش تصویریں لگاتا ہے تو کہیں پر میڈونا کی تصویریں لگا رکھی ہیں۔ اپنی تحریروں میں بیشتر اوقات جنسی کشش والے الفاظ استعمال کرتا ہے۔
افسوس کا مقام تو یہ ہے کہ خود کو مذہب اور ختم نبوت کا سپاہی کہنے والا یہ فاروق نام نہاد درویش مذہب کا نام استعمال کر کے نوجوان نسل کو گمراہ کر رہا ہے۔
آپ خود اس کے بلاگ فیس بک بیچ اور اسی کی سارا غزل والی آئی ڈی پر بہت سارا واہیات مواد دیکھ سکتے ہیں۔ ذرا سوچیں عریاں تصاویر لگا کر اور گالیاں لکھ کر فاروق درویش بھلا کس اخلاقیات کی تبلیغ کر رہا ہے۔
یہ سب اس کی بے ہودگی کی انتہا ہے۔
ہماری رپورٹ کے بعد بے شک وہ تصویریں اور گندے الفاظ ہٹا دے مگر ہم نے ہر چیز کے اسکرین شاٹ لے رکھے ہیں۔ شاید فاروق درویش یہ نہیں جانتا کہ جب ایک چیز ایک دفعہ انٹرنیٹ پر آ جائے تو ویب آرکائیو میں ہمیشہ کے لئے محفوظ ہو جاتی ہے۔
سائبر کرائم ادارے کو ایسے تمام لنک اور ویب آرکائیو فراہم کر دی گئی ہیں۔
farooq darwaish pictures
یہ تصویر فاروق درویش کے بلاگ اور فیس بک پیج کے ڈیٹا کی ہے۔
آپ خود فیصلہ کریں کہ یہ کیسے نوجوان نسل کو ورغلا رہا ہے۔ سارا غزل والی آئی ڈی سے کسی خاتون کی واہیات تصویر لگا کر مردوں کو دعوت گناہ دے رہا ہے۔
فحاشی پھیلانے والا درویش۔ میلہ درویش 4 فحاشی پھیلانے والا درویش۔ میلہ درویش 4 Reviewed by یاسر خوامخواہ جاپانی on 3:54 PM Rating: 5

3 تبصرے:

علی کہا...

ایسی محنت سے اپنے بلاگ کی شہرت کی ہوتی تو دنیا کا سب سے بڑا بلاگ بن چکا ہوتا :)
ویسے فلم ابھی باقی ہے یا مک مکان ہو گئی؟

افتخار راجہ کہا...

ویسے انہون نے بلاول بھٹو کو گالیاں دیتے ہوئے اسکے بھی بہت ناقابل بیان قسم کے فوٹوز لگائے ہوئے تھے، اچھا ہوتا اگر آپ عوامی تفریح اور دل پشوری کےلئے وہ بھی شامل کردیتے۔

چلو اب شروع تو آپ نے کردیا، مگر درخواست ہے کہ آئیندہ اس طرح کے فوٹو شائع کرنے سے گریز ہی کیا جائے تو اچھا،
اس بار کی معافی ہے اور اسکو ادھر رہنے ہی دیں۔ عوام کی تعلیم کےلئے۔

جواد احمد خان کہا...

بڈھا مویش گڈھے (قبر میں نہیں )میں پیر لٹکائے بیٹھا ہے مگر ہوس پرستی اور فحش پسندی کی عبرتناک مثال بنا ہوا ہے ۔
مجھے تو لگتا ہے کسی دن نیٹ پر ننگی سائیٹ کو کھول کر **** لگا تے ہوئے اسکی موت آئے گی۔۔۔۔ سالا ٹھرکی بڈھا۔۔

تقویت یافتہ بذریعہ Blogger.