ڈائریکٹ ہی کام کروا دیں نا!

یاسر بھائی مجھے اللہ نے "دیا" تو میں ایک پیسہ اپنے پاس رکھے بغیر غرباء میں تقسیم کردوں گا۔
بس میں اللہ سے دعا کرتا ہوں کہ وہ مجھے چھپڑ پھاڑ کر دے۔
آپ اللہ سے "لینے " کیلئے کیا کر رہے ہیں؟
کیا مطلب؟
کاروبار کیا کر رہے ہیں جناب؟
گاڑیوں کا کام کرتا ہوں۔۔
وہ تو مجھے بھی معلوم ہے آپ تقریباً بیس پچیس سال سے یہ کاروبار کر رہے ہیں۔
چھوڑیں بتائیں کیا حال چال ہیں اور کاروبار کیسا چل رہا ہے؟
یاسر بھائی کیا بتاؤں ! بہت بری حالت ہے۔
ہر طرف کاروبار تباہ حال ہے۔
ہاں حالات تو کافی ناساز ہی نہیں نازک و اندام بھی ہیں۔
یاسر بھائی آپ کاروبار کیسا چل رہا ہے۔
اللہ کا شکر ہے۔ سب ٹھیک ٹھاک ہے۔
آپ کو لین اور گاہک اچھے مل گئے ہیں۔اس لئے اچھا چل رہا ہے۔
آپ کا کاروبار تو دس سال پہلے بھی "ماٹھا "اور اب بھی آپ کے حالات ٹھیک نہیں!
کوئی دوسرا کاروبار یا "کام" کر لیں جناب۔
یہ کیا بات ہوئی۔۔آپ کما رہے ہو اور ہم کیوں نہیں کما سکتے؟
کیوں نہیں کماسکتے ضرور کما سکتے ہیں۔
لیکن دس سال پہلے بھی آپ کاکہنا تھا کاروبار تباہ حال ہے اور اب بھی آپ یہی کہہ رہے ہیں تو سوچا "مشورہ دے دوں۔
اللہ مالک ہے جی
وہ تو ہے، انکار کرکے بھی اس نے مالک ہی رہنا ہے۔
اور سنائیں۔؟
بس آپ کی دعائیں ہیں۔
۔۔۔۔۔۔۔۔۔
۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔
بس دعا کریئے گا اللہ مجھے چھپڑ پھاڑ کر دے تاکہ میں غرباء کی دل کھول کر مدد کروں۔
(سر پیٹ کر دو چار دل ہی دل میں کھنگورے لینے کے بعد)
ارے جنابو !!
آپ اللہ میاں کو کیوں لمبے چوڑے کام میں ڈال رہے ہیں۔اللہ میاں کو اور بھی بہت کام ہیں۔
آپ ایسا کریں۔
غرباء کا معاملہ ہی اللہ میاں کے حوالے کردیں۔
جو چھپڑ آپ کی طرف والا پھاڑ کر آپ کو دے گا
آپ اللہ میاں سے کہیں وہ غرباء کیطرف والا چھپڑ پھاڑ کر ڈائریکٹ ہی دے دے۔
یہ کیا بات ہوئی؟
بھائی آپ نے بھی اللہ میاں سے غرباء کیلئے ہی وصولنا ہے۔کونسا اپنے لئے مانگ رہے ہیں۔
ایویں ہی میرے جیسے غرباء جو غربت کے بوجھ تلے دبے ہوئے ہیں۔
آپ کے احسان تلے بھی دب جائیں گئے!!
ڈائریکٹ ہی کام کروا دیں ۔۔اللہ میاں آپ کا بھی بھلا کر دیں گے۔

ڈائریکٹ ہی کام کروا دیں نا! ڈائریکٹ ہی کام کروا دیں نا! Reviewed by یاسر خوامخواہ جاپانی on 12:46 PM Rating: 5

4 تبصرے:

دہرہ ح کہا...

یاسر بھائی آپ نے ہم سب کے اندر معصومیت اور اِخلاص کا لبادہ اوڑے چھُپے ہوئے چور پر ڈائیریکٹ حملہ کردیا ہے۔ ہم سب اِسی چور کے غُلام ہے جو بڑی معصومیت سے خود کو خُدا بنا دیکھنا چاہتا ہے غریبوں کا ان داتا بن کر اپنی میں کو پھلتا پھولتا دیکھنا چاہتا ہے۔

منصور مکرم کہا...

ہاہاہاہا۔ایک عمومی رویے کی عمدہ مثال پیش کی ہے۔

نعمان زاہد کہا...

عام بندے کا حال وضاحت سے بیان فرما دیا۔۔۔ اب عام بندوں کی طرف سے فتوں کا انتظار فرمائیں۔۔۔ :)
:D

ali کہا...

:D

تقویت یافتہ بذریعہ Blogger.