خوش خبری مسئلہ کشمیر حل ہو گیا

ہمارے آقاوں کے شہر نیو یارک  سے!!


اقوام متحدہ نے مسئلہ کشمیر کو حل طلب معاملات کی فہرست سے خارج کردیا ہے۔مسئلہ کشمیر کو فہرست سے خارج کرنے پر اقوام متحدہ میں پاکستان کے مندوب عبداللہ حسین ہارون نے شدید احتجاج کیا ۔مسئلہ کشمیر کے حوالے سے اقوام متحدہ میں یہ اٹھتیسویں قرار داد تھی جسے اقوام متحدہ میں بیلجیئم کے نمائندے نے پیش کیا اور17جنوری1948ءکو اقوام متحدہ کی سلامتی کونسل کے 229ویں اجلاس میں حل کیلئے منظور کر لیاتھا۔


اور اب حل طلب معاملات کی فہرست سے خارج کرکے مسئلہ کشمیر حل کردیا۔مجھے پریشانی ہے ۔کہ ہمارے ہونہار نونہالوں کی نصاب کی کتابوں میں سے مسئلہ کشمیر کا مضمون ہماری وزارت تعلیم کب حذف کرنے کا اعلان کرتی ھے۔میری یہ پریشانی کشمیراورپاکستان کی اتنی لمبی چوڑی تاریخ کیلئے نہیں ھے۔میری پریشانی نو نہالوں کے ڈیڈ اینڈ پاپ اینڈ مام کیلئے ہے کہ انہیں نئی نصاب کی کتابیں خریدنی پڑیں گئیں۔


جس قوم کے وزیر اعظم صاحب پریشان ہوں کہ اگر کرپٹ قومی اسمبلی کے ارکان کو نکال دوں تو خالی خولی اسمبلی کا وزیر اعظم کہلاوں؟


جس قوم کے لیڈروں پر دنیا ہی اعتبار نہ کرے اور گواہی دے رہی ہو کہ اس قوم کے لیڈر کرپٹ ہیں۔تو اس قوم کے مسائل اقوام متحدہ یک طرفہ طور پر حل کر دیتی ھے۔


اس حل سے امن کی آشا کے حضرات بھی نہایت مطمعین ہوں گے کہ ان کی محنت رنگ لائی اور انڈیا پاکستان کی دشمنی کی بنیاد ختم ہوئی۔اور پاکستان کے حقیقی مالکان اور حکمرانوں نے بھی سکون کا سانس لیا ہوگا،کہ ایک نئی قوم  جوپاکستان میں شامل ہوکر اپنے حقوق کیلئے لڑنے کو تیار تھی اس سے جان چھوٹی!۔


اب چند دنوں کی بات ھے۔بغلیں بجاتے دانشور اقوام متحدہ کے حق میں دلائل دیتے نظر آئیں گے۔


تو جناب جشن کب منا رہے ہیں؟


 


 


 
خوش خبری مسئلہ کشمیر حل ہو گیا خوش خبری مسئلہ کشمیر حل ہو گیا Reviewed by یاسر خوامخواہ جاپانی on 8:52 PM Rating: 5

8 تبصرے:

افتخار اجمل بھوپال کہا...

مسئلہ کشمير تو پرويز مشرف حل کر گيا تھا ۔ صرف اس کی نوٹيفيکيشن کرنا باقی تھا جو اب ہو گيا ۔ مجھ پر اعتبار نہ ہو تو پرويز مشرف اور خورشيد محمود قصوری کے پرانے بيانات پڑھ کر ديکھ ليجئے

یاسر خوامخواہ جاپانی کہا...

نہیں محترم ہمیں آپ پر اعتبار ھے۔

کاشف نصیر کہا...

مبارک ہو جی۔

وقاراعظم کہا...

مجھے تو شدید حیرت ہوئی کہ اقوام متحدہ میں پاکستانی مندوب حسین ہارون نے اس مسئلے پر شدید احتجاج کیا ہے. اور تو اور آج کی خبر کے مطابق اقوام متحدہ نے اسے غلطی تسلیم کرتے ہوئے معذرت بھی کی ہے. خدا خیر کرے....
نام تو ان کا حسین حقانی سے ملتا جلتا ہے لیکن کام تھوڑا مختلف کرگئے ہیں....

محمداسد کہا...

میرے خیال میں یہ کام کافی پہلے ہوچکا تھا، اب تو صرف اسے باضابطہ شکل دے دی. بہرحال یہ نہ صرف کشمیریوں کے ساتھ سراسر زیادتی ہے بلکہ موجودہ بھارتی مظالم کو شہہ دینے کے مترادف بھی ہے.

(ایک درخواست ہے کہ اس طرح کی اہم خبروں پر تبصرہ کرتے وقت ممکن ہو تو خبر کا ربط ضرور شامل کرلیا کی جئے. اس سے نہ صرف اس کی تصدیق میسر آجاتی ہے بلکہ ہم جیسے کم علموں کے علم میں بھی اضافہ ہوجاتا ہے)

میرا پاکستان کہا...

آپ کو عید مبارک ہو.

یاسر خوامخواہ جاپانی کہا...

اسد ایسی اہم خبر میں سمجھا تھا سب کے علم میں ھے،اور بریکنگ نیوز کے طور پاکستان پہونچ گئی ہو گی۔لیکن دودن بعد ایک چھوٹی سی خبر پڑھنے کو ملی کہ اقوام متحدہ نے یقین دھانی کروائی ھے،کہ کشمیر کو حل طلب مسائل میں شامل کر لیا جائے گا،
حکمرانوں کو تو ہم گالیاں دیتے نہیں تھکتے۔
تو یہ حق پرست اور سچا میڈیا کیوں اس خبر پر اتنا دھیما ھے؟

Truden کہا...

ЎHola!

Que palabras...
Truden

تقویت یافتہ بذریعہ Blogger.