ھنگامہ دل و دماغ ۔۔۔۔۔

ہمیں تو یہی سمجھ آتا ھے کہ انسان کی نیک فطرت اللہ میاں نے بنائی اور انسان کو اختیار دے دیا۔
اگر ایسا نہ ھوتا تو تخلیق کرکے شیطان کی طرح ملعون نہ کر دیتا؟

جب انسان کو اختیار مل گیا تو حضرت انسان نے خیرو شر کی اصطلاحیں گھڑیں اور اپنے پر بھی نافظ کیں اور دوسروں پر بھی نافظ کرنے کی خواہش کی۔اور جب حضرت انسان خواھشات کا غلام ھوا توھٹ دھرم اور خونخوار ھوا۔اس خواھشات کی غلامی میں انسان نے نیک فطرت کو بگاڑا اور خود بھی اذیت میں مبتلا ھوا اور دوسرے اپنے ھم جنسوں کو بھی اذیت میں مبتلا کیا اللہ میاں نے ایک لاکھ چوبیس ہزار پیغمبر و رسول بھی بھیجے کہ حضرت انسان نیک فطرت ہی رھے لیکن اس اختیار کے نشے نے حضرت انسان کو مضطرب ہی رکھا۔

تاریخ پڑھتے ہیں تو انسان کو ہمیشہ دوسرے کے خون کا پیاس پایا۔انسان ہمیشہ سے دوسرے کو نیست ونابود کرتا رہا۔دوسرے کو نوچتا کھسوٹتا رہا۔اور ہمیشہ سے اچھائی اور اعلی اخلاقیات کا داعی بھی رہا۔

کیا انسان ہمیشہ دھوکے باز، فریب کار، غدار، جھوٹا، بے وقوف،ناقص العقل،ڈاکو، لٹیرا، جیب تراش بدمعاش،متعصب،خونخوار،حریص،بد خو،عیاش،زانی،شرابی،بخیل،حاسد،عیاش،،ریا کار رہا ھے اور رھے گا؟

کیا ماس خور حیوان معصوم ہرن کو پائے تو چھوڑ دے گا؟

بھوکابھیڑیا بھیڑ کو چھوڑ دے گا؟

گھوڑا سبز گھاس کو چھوڑ دے گا؟

شکرے کو کبوتر ملے تو کیا چھوڑ دے گا؟

کیا گدھ مردار کو نہیں نوچے گا؟
کیا تیز رفتار گاڑی بغیر ایندھن کے چلے گی؟

ماس خور جانور،بھیڑیا،گھوڑا،شکرا،گدھ۔۔۔۔۔۔۔۔۔انسان۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔میں کوئی فرق ھے؟

۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔ضرور۔۔۔ھے۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔ان میں اور انسان میں زمین آسمان کا فرق ھے۔

ان حیوانوں نے اگر ابھی تک فطرت نہیں بدلی تو انسان کیوں بدلے؟

لیکن انسان تو نیک فطرت ھے۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔تو پھر اختیار ؟؟؟؟؟؟؟؟؟؟
ھنگامہ دل و دماغ ۔۔۔۔۔ ھنگامہ دل و دماغ ۔۔۔۔۔ Reviewed by یاسر خوامخواہ جاپانی on 1:21 PM Rating: 5

7 تبصرے:

جعفر کہا...

اس عمر میں یہ سوال بندے کو بہت تنگ کرتے ہیں
خاص طور پر فارغ البال کو۔۔۔
ان کے جواب ملیں تو مجھے بھی ضرور بتائیے گا۔۔۔
میرا بھی بھیجہ ابلتا رہتا ہے۔۔

خاور کھوکھر کہا...

میں نے ایسی باتوں کی کیٹگری رکھی هے
کھسکی باتاں
انگیزی میں کہتے هیں پیچ ڈھیلا ہے

یاسر خوامخواہ جاپانی کہا...

ہاہاہا۔۔۔۔۔۔جعفر جی میں گنجا نہیں ھوں۔
خاور جی دیکھ لیں۔پاکستانی ننانوے فیصد کھسکے ھوئے ہیں۔

Saad کہا...

Im not in mood to comment!

وقاراعظم کہا...

میرا تعلق بچے ہوئے ایک فیصد سے ہے، لہذا میں یہ سب نہیں سوچتا۔ ہاہاہاہا۔۔

یاسر خوامخواہ جاپانی کہا...

سعد اور وقار کیا آپ دونوں حکمران طبقے سے ہیں؟

عثمان کہا...

جاپانی خوامخواہ خلیل جبران

تقویت یافتہ بذریعہ Blogger.