جی اوئے پھیپھے کٹنی

لوگ بھی کیسے دلچسپ ھوتے ہیں اپنا علاج خود ہی کر رھے ھوتے ہیں
۔وہ یہ خیال کرتے ہیں کہ کسی ٹونے ٹوٹکے سے ان کا مرض رفع ھو جائے گا
۔اس طرح کیا اچھے ہوں گے۔بد سے بدتر ھوتے چلے جاتے ہیں
۔اخلاق کے داعیوں کی طرف دیکھئے۔
کیا تماشہ ھے۔
یہ اخلاقیات کی اصلاحیں کرتے ہیں۔
اور خیال کرتے ہیں۔ان کی اصلاحوں سے وہ انسان کی بد دیانتی اور بد معاشی کا خاتمہ کردیں گے۔
ان بے چاروں کو یہ معلوم نہیں کہ وہ خود بد دیانتی اور بدمعاشی میں سر کٹوا رھے ہیں۔
کس کی بد دیانتی؟ کس کی بد معاشی؟
لمحہ فکریہ ھے۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔کہیں اپنی ہی تو نہیں؟
جی اوئے پھیپھے کٹنی جی اوئے پھیپھے کٹنی Reviewed by یاسر خوامخواہ جاپانی on 10:17 PM Rating: 5

7 تبصرے:

Anonymous کہا...

زندہ باد

DuFFeR - ڈفر کہا...

آنٹی کی اتنی مٹی پلید ہوئی ہے کہ اب اپنی جنس بدلنے کا ڈرامہ کر کے اس کی شدت کو کم کرنا چاہ رہی ہیں

Tawarish کہا...

damadam mast qalandar

عادل بھیا کہا...

جاپانی بھیا۔۔۔۔ میرا تو دماغ خراب ہوا چلا ہے۔۔۔ نجانے یہ سب کیا ہو رہا ہے۔۔۔

یاسر خوامخواہ جاپانی کہا...

چلیں جی ایک تماشہ تو ختم ھوا۔
نیا کون شروع کرتا ھے۔دیکھتے ہیں۔
لگتا تو یہی ھے پرانے ہی شروع کریں گے۔

وقاراعظم کہا...

اور میں سوچ رہا ہوں کہ باراسنگھے کا کیا ہوگا؟
:D

زیشان اکرم رانا کہا...

جی اوے پھیپے کٹنی کمال کر دیتتا اے لکھدے رہوتے وسدے رہو

تقویت یافتہ بذریعہ Blogger.