جو مزا نسوار میں ھے

جو مزہ نسوار میں ھے
نہ عشق میں نہ پیار میں ھے
موٹر میں نہ کار میں ھے
دِل میں نہ دِلدار میں ھے
جو مزہ نَسوار میں ھے

گھر میں نہ بازار میں ھے
باغ میں نہ بَہار میں ھے
آم میں نہ اَنار میں ھے
چَٹنی میں نہ اَچار میں ھے
جو مزہ نَسوار میں ھے
نہ سُر میں نہ تال میں ھے
نہ پائل کی جَھنکار میں ھے
نہ سات سمندر پار میں ھے
نہ ہِچکی نہ ڈَکار میں ھے
ٹیپ نہ وی سی آر میں ھے
جو مزہ نَسوار میں ھے
جو مزہ نَسوار میں ھے
جو مزا نسوار میں ھے جو مزا نسوار میں ھے Reviewed by یاسر خوامخواہ جاپانی on 10:42 PM Rating: 5

کوئی تبصرے نہیں:

تقویت یافتہ بذریعہ Blogger.